محمد ضمیر اسدی

سی پیک 21ویں صدی کا اہم ترقیاتی و سفارتی اقدام ،29 ارب ڈالر کے 23 منصوبے مکمل ہوچکے ہیں،محمد ضمیر اسدی

ا سلام آ باد (عکس آن لائن)چائنا انٹرنیشنل پریس کمیونیکیشن سینٹر کے ریسرچ فیلو محمد ضمیر اسدی نے کہا ہے کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری (سی پیک) 21ویں صدی کا اہم ترقیاتی اور سفارتی اقدام ہے،اس کے تحت 29 ارب ڈالر کے 36 منصوبے مکمل ہوچکے جبکہ 22 پر کام جاری ہے،چین عالمی سطح پر 3000 بیلٹ اینڈ روڈ انیشی ایٹو (بی آر آئی) منصوبوں میں ایک ٹریلین ڈالر سے زیادہ کی سرمایہ کاری کرچکا اور 40 ملین سے زیادہ لوگوں کو غربت سے نکال کر ان کی زندگی پر مثبت اثرات مرتب کیے ہیں ۔

انہوں کہا کہ 14ویں قومی عوامی کانگریس کا اور چینی عوامی سیاسی مشاورتی کانفرنس کی 14ویں قومی کمیٹی کا دوسرا اجلاس بالترتیب 5 اور 4 مارچ کو بیجنگ میں شروع ہوگا۔ انہوں نے کہاکہ 3,000 سے زیادہ چینی اور غیر ملکی صحافی ان اجلاسوں کی کوریج کریں گے ۔ان کا کہنا تھاکہ نیشنل پیپلز کانگریس (این پی سی)، قومی مقننہ اور چائنیز پیپلز پولیٹیکل کنسلٹیٹو کانفرنس (سی پی پی سی سی)کے دو اجلاس ایک ایسے وقت ہو رہے ہیں جب چین 2049 تک ایک جدید سوشلسٹ ملک کی تعمیر کے دوسرے صد سالہ ہدف پر گامزن ہے جو خوشحال، مضبوط، جمہوری، ثقافتی طور پر ترقی یافتہ اور ہم آہنگ ہو۔

ضمیر اسدی نے کہا کہ چین پہلے ہی 2021 تک ہر لحاظ سے ایک معتدل خوشحال معاشرے کی تعمیر کا اپنا پہلا صد سالہ ہدف حاصل کر چکا ہے، دو سیشنز دنیا کو یہ سمجھنے کا موقع دیں گے کہ چین نے 2020 سے اس صدی کے وسط تک کی مدت کے لیے دو مرحلوں پر مشتمل ترقیاتی منصوبہ کس طرح تیار کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ 2020 سے 2035 تک کے پہلے مرحلے میں چین اعتدال پسند خوشحال معاشرے کی تشکیل کردہ بنیاد پر مزید 15 سال سخت محنت کرے گا،دوسرے مرحلے میں 2035 سے 21 ویں صدی کے وسط تک چین بنیادی طور پر جدیدیت حاصل کرنے پر تعمیر مزید 15 سال تک سخت محنت کرے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ چین کا 14 واں پانچ سالہ منصوبہ (2021-25)، جس کی 11 مارچ 2021 کو نیشنل پیپلز کانگریس (این پی سی) نے باضابطہ طور پر توثیق کی تھی، تاریخی کامیابیوں کے ساتھ اپنے چوتھے سال میں داخل ہو رہا ہے۔

اپنا تبصرہ لکھیں