مسجد اقصی

یہودیوں کومسجد اقصی پر باب الاسباط سے دھاوا بولنے کی اجازت

مقبوضہ بیت المقدس(عکس آن لائن) قابض فوج نے یہودی آباد کاروں کو مسجد اقصی پر باب الاسباط سے دھاوا بولنے کی اجازت دے دی۔میڈیارپورٹس کے مطابق بیت المقدس کے اسلامی اوقاف نے ایک بیان میں کہا ہے کہ آباد کاروں کا ایک گروہ باب الاسباط سے باہر نکل آیا اور مراکشی گیٹ سے قبلہ اول کے صحن پر دھاوا بولا۔

اسلامی اوقاف نے اس نئی پیش رفت کو ایک “اشتعال انگیز قدم اور صریح خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے آباد کاروں کی طرف سے مسجد اقصی کی توہین کی مذمت کی۔اوقاف کے مطابق 280 سے زائد آباد کاروں نے صبح مسجد اقصی پر دھاوا بولا اور اس کے صحنوں میں تلمودی رقص اور رسومات ادا کیں۔مسجد اقصی پر حملہ کرنے والے آباد کاروں کے لیے باب الاسباط کھولنا نام نہاد ہیکل گروپس کی طرف سے مسجد کے تمام دروازوں سے گھسنے والوں کے لیے کھولنے کے مطالبے کے بعد سامنے آیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں